Home / شاعری / Sham Se Aaj Saans Bhaari Hai

Sham Se Aaj Saans Bhaari Hai

شام سے آج سانس بھاری ہے

بے قراری سی بے قراری ہے

آپ کے بعد ہر گھڑی ہم نے

آپ کے ساتھ ہی گزاری ہے

رات کو دے دو چاندنی کی ردا

دن کی چادر ابھی اتاری ہے

شاخ پر کوئی قہقہہ تو کھلے

کیسی چپ سی چمن میں طاری ہے

کل کا ہر واقعہ تمہارا تھا

آج کی داستاں ہماری ہے

About eAwaz

eAwaz

Check Also

Khuli Kitaab Ke Safhay Altte Rehtay Hain

کھلی کتاب کے صفحے الٹتے رہتے ہیں ہوا چلے نہ چلے دن پلٹتے رہتے ہیں …

Live Radio Stream